تحریرسیدہ ہاشمی………ممتاز مفتی ہماری نظر میں

مفتی صاحب کو میں بلکل بھی نا جانتی تھی… ایک دن یه گروپ نظر کے سامنے سے گزرا ..انکے الفاظ نے اتنا متاثر کیا که ….ان کو سمجھتی گیی اور پڑھتی گیی… ان کو جتنا پڑھتی مجھے میرے سوالوں کے جواب ملتے… میری الجھنیں سلجھتی گیں.. یوں لگا کوی رهنما ملا ھو… مطلب آج اس دور میں مفتی صاحب میرے رهمنا کیسے ھو گیے… یه توالله کا خاص کرم هوا ان پر که… وه آج بھی کیی لوگوں کی الجھنوں اور سوالوں کیلیے باعث راحت هیں… میرے لیے مفتی صاحب رهمنا ثابت هوے…اج کل انکی کتاب تلاش پڑھ رهی ھوں….یقین ھے مجھے میری تلاش کی راهیں هموار هوں گی… جزاک الله download (3)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *